بچوں کو خدا کی معرفت کیسے سکھائیں

اپنے بچوں کو خدا کی معرفت کیسے سکھائیں اور کہاں سے شروع کریں اور کس طرح سے سمجھائں کی وہ دلیلوں کے ذریعے سمجھ جائےکی خدا ایک ہے

جواب

بسم اللہ الرحمن الرحیم

 سلام علیکم ورحمۃ اللہ 

اسلام میں جہاں بچوں کی تعلیم اور تربیت پر زور دیا گیا ہے وہیں بچوں کی تربیت کے اصول بھی ذکر کئے گئے ہیں، اگر ان اصول کی پابندی کی جائے تو آسانی سے بچوں کی تربیت کی جا سکتی ہے اور انکو اسلامی تعلیمات سے آگاہ کیا جا سکتا ہے۔ بچوں کی تعلیم کے بعض اصول کی طرف یہاں اشارہ کیا جا رہا ہے


الف: برہان نظم کے ذریعہ: 

 ہم بندوں کے اختیار میں موجود خداوند عالم کی بے پناہ نعمتوں سے سہارا لیتے ہوئے سادہ الفاظ میں خدا کی ذات اور اس کے بعض صفات کو برہان نظم کے ذریعہ اپنے بچوں کے لئے ثابت کر سکتے ہیں. اسکو بتائیں کہ دنیا میں موجود تمام اشیاء ایک خاص نظم کے تحت حرکت کر رہی ہیں تو یقینا اس نظام کو قائم کرنے والا کوئی موجود ہے اور وہی خدا ہے۔

اثبات خدا کے لئے سب سے عام اور آسان برہان و دلیل یہی ہے، قرآن مجید اور روایات میں بھی اس برہان کو بہت اہمیت دی گئی ہے، یہ برہان پیچیدہ فلسفی مفاہیم و قواعد سے خالی ہے اسی وجہ سے اس برہان سے ہر شخص فائدہ اٹھا سکتا ہے ۔ 


ب:خلقت سے مدد لینا: 

مخلوقات خداوند عالم کی پیدائش کی طرف اشارہ کریں۔ بچوں کو ان عجائب سے آشنا کرائیں،زمین و آسمان اور دریائوں میں موجود مخلوقات کی خلقت پر خدا کی قدرت سے اپنے بچوں کو آگاہ کریں 

قرآن مجید میں ایسی بہت سی آیات ہیں جو ہمیں خلقت پر غور و فکر اور تدبر کی دعوت دیتی ہیں


مثلاً ہم قرآن مجید میں پڑھتے ہیں: ((خداوند عالم نے شہد کی مکھی کو وحی کیا کہ پہاڑوں ،درختوں اور اونچی جگہوں پر گھر بناؤ ۔ پھر میٹھے پہولوں سے غذا فراہم کرو اور اپنے پروردگار کے بتا ئے ہوئے طریقہ پر چلو ،پھر اس سے مختلف رنگ میں میٹھا شربت نکلتا ہے جس میں لوگوں کے لئے شفا ہے))[ نحل/68-69] اس طرح قرآن کریم ہمیں اونٹ ، پہاڑ،آسمان وزمین وغیرہ کی خلقت پر فکر کی دعوت دیتا ہے ارشاد ہو تا ہے ((کیا وہ اونٹ کی طرف نہیں دیکھتے کہ اسے کس طرح پیدا کیا گیا ہے ؟اور آسمان کی طرف نہیں دیکھتے کہ وہ کس طرح بلند کیا گیا ہے ؟اور پہاڑوں کی طرف کہ وہ کس طرح نصب کئے گئے ہیں اور زمین کی طرف نہیں دیکھتے کہ کس طرح ہموار کی گئی ہے ؟))[ غاشیہ ،20و 17[ أفلا یَنظرُونَ الی الاِبل کیفَ خُلِقَت ۔ والی السَّماءِ کیفَ رُفِعَت ۔ والی الجِبالِ کیف نُصِبَت ًوالی الأرضِ کیف سُطِحَت]

 اگر خداوند عالم کی ان مخلوقات کے عجائب کو سادہ الفاظ اور بچوں کی زبان ان سے بیان کریں تو کافی حد تک ہم انھیں خدا سے آشنا کر سکتے ہیں۔ اس سلسلہ میں موجود دستاویزی فیلمیں بچوں کو دکھائیں۔ بچے کے ساتھ پارک یا باغ وغیرہ میں گھومنے جائیں۔ خدا کی خلقت کے بارے میں سادہ الفاظ میں اس سے گفتگو کریں۔ 


ج:مناسب مذہبی قصہ و کہانی بیان کرنا :

بچے قصہ کہانیاں بہت شوق سے سنتےہیں۔ لہذا مشہور اور تجربہ کار سے مایر نفسیات کہانیوں کے ذریعہ بچوں کے ذہنیت بدل دیتے ہیں۔ اسی طرح مشکل سے مشکل باتیں کہانیوں کی مدد سے بچے کے ذین نشین کرائی جا سکتی ہیں۔ قرآن مجید میں بھی قصہ اور کہانیوں کو بہت اہمیت دی گئی اور مختلف انبیاء کے قصے بیان کئے گئے ہیں۔ جیسے :حضرت ابراہیم ؑکا قصہ ،اور آپ کی مشرکوں اور بت پرستوں سے بحث اور خدا کے وجود ، اس کی وحدانیت کے سلسلہ میں آپ کے خوبصورت استدلال وغیرہ بیان کریں ۔ اس سلسلہ میں بہت سی کتابیں بھی موجود ہیں ان سے بھی مدد لی جا سکتی ہے۔ 

د: خدا کی اپنے بندوں سے محبت

بچے کو خدا کی محبت سے آگاہ کرایا جائے۔ اسے بتایا جائے کہ خدا کتنا مہربان ہے۔ اس نے ماں باپ، اچھے دوست، تندرستی اور مزےدار کھانے وغیرہ کی شکل میں ہمارے لیے بہت سارے تحفے بھیجے ہیں۔ ہم اسے یہ آیت سنا سکتے ہیں (خدا وہ ہے جس نے زمین و آسما ن کو پیدا کیا اور آسمان سے پانی نازل کیا جس کے ذریعہ زمین سے تمہارے لئے میوے اگاے [ابراہیم ،32] اس سے کہیں کہ (وہ [خدا ]مہربانوں میں سب سے زیادہ مہربان ہے )[ یوسف ،64] اسکو یہ یقین دلایا جائے کہ خدا تمکو بہت چاہتا ہے۔ جب اسکے ذہن میں یہ بات بیٹھ جائے گی تو اسکے دل میں خدا کی ایسی محبت پیدا ہوگی کہ تا عمر نہیں نکل سکتی۔

ھ: مثالوں سےمدد لینا۔ 

مختلف مثالوں کے ذریعہ اسکو خدا سے آشنا کرایا جائے اور دو خدا ہونےکی صورت میں پیدا ہونے والی مشکلات کی طرف توجہ دلائی جائے۔ اس کے لئے بھی قرآنی مثالوں سے مدد لی جا سکتی ہے



مزید مطالعہ کے لئے ذیل کی کتا ہیں پڑھیں :


1۔خدا شناسی قرآن کودکان ،غلام رضا حیدری ابہری


2۔خانوادہ در اسلام ،حسین مظاہری


3۔دہ درس خدا شناسی برای جوانان ،ناصر مکارم شیرازی


5,000 تومان
अगर आप हमारे जवाब से संतुष्ट हैंं तो कृप्या लाइक कीजिए।
0
شیئر کیجئے